پاکستانپہلا صفحہصحتکرونا وائرس

کووڈ 19 کا غلط مطلب بتانے پر زرتاج گل پر ایک بار پھر تنقید

سہب حال

 کرونا وائرس کو کووڈ 19 کیوں کہا جاتا ہے۔۔؟

  •  کووڈ 19 کے نام میں ’کو‘ کا مطلب  Corona’کورونا‘
  • ’وی‘ کا مطلب Virus ’وائرس‘
  •  ’ڈ‘ کا مطلب disease یعنی بیماری ہے۔

عالمی ادارہ صحت نے ابتدا میں اس کو  ’2019 نیا کورونا وائرس‘ یا ’2019 – این کو‘ کا نام بھی دیا تھا بعد ازاں اسے کووڈ 19 کا نام دیا گیا۔اس بیماری یعنی ‘اپیمیڈک’ کو مارچ میں ‘پینڈیمک’ یعنی وبا قرار دیا تھا اور بعد ازاں مئی میں کہا تھا کہ ممکن ہے کہ کورونا ‘اینڈیمک’ بن جائے یعنی یہ بیماری کبھی ختم نہ ہو اور کئی سال تک دنیا کو اس کا سامنا کرنا پڑے۔

کورونا کی وبا دسمبر 2019 میں چین کے شہر ووہان سے شروع ہوتے ہوئے دنیا بھر میں پھیل گئی۔پاکستان میں کورونا وائرس کاپہلا کیس 26 فروری2020 کو کراچی میں سامنے آیا تھا، جس کے بعد یہ آہستہ آہستہ پورے ملک میں پھیلتا گیا۔

جب سے کرونا شروع ہوا ہے  اس کے متعلق دنیا کے متعدد ممالک کے حکمرانوں اور حکومت میں شامل وزراء اور اہم افراد کی جانب سے انوکھی باتیں شروع اور چٹکلے دیکھنے اور سننے کو ملے

کرونا وبا سے متعلق انوکھی اور غلط معلومات پر باتیں کرنے والے سیاستدانوں کو عوام کی جانب سے تنقید کا نشانہ بھی بنایا جاتا رہا ہے۔اس بار وفاقی وزیر برائے ماحولیاتی تبدیلی زرتاج گل  نشانے پر ہیں اور انہیں  انوکھی معلومات بتانے پر تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

زرتاج گل نے 18 جون 2020 کو پاکستان ٹیلی وژن نیوز کے پروگرام (سچ کے ساتھ) میں میزبان سید انوارالحسن کے ساتھ کورونا کے حوالے سے بات کی اور بتایا کہ حکومت نے وبا سے بچنے کی ضمن میں کیا اقدامات اٹھائے۔

زرتاج گل کی جانب سے کووڈ 19 کو دراصل 19 پوائنٹس قرار دینے پر سوشل میڈیا پر ان پر خوب تنقید کی گئی اور 21 جون کو ان کا نام ٹاپ ٹرینڈ رہا۔

یہ پہلا موقع نہیں ہے کہ زرتاج گل کے کسی بیان پر انہیں تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہو، اس سے قبل انہوں نے پاکستان میں اچھے اور بارشوں کے موسم پربات کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ اچھے موسم کا کریڈٹ خود نہیں لینا چاہتیں بلکہ وہ اچھے موسم کا کریڈٹ وزیر اعظم عمران خان کو دینا چاہتی ہیں۔

 سوشل میڈیا پر ان کے کووڈ 19 کے 19 پوائنٹس بتانے کی ویڈیو کلپ وائرل ہوگئی، جس کے بعد انہوں نے ایک وضاحتی ٹوئٹ بھی کی اور اپنی غلطی تسلیم بھی کی۔زرتاج گل نے اپنی وضاحتی ٹوئٹ میں لکھاکہ وہ روزانہ ٹی وی پر پرچی کے بغیر گھنٹوں بات کرتی ہیں اور وہ کووڈ 19 کے حوالے سے کہنا چاہتی تھی کہ وبا کا اثر، شدت مختلف ممالک میں مختلف ہے۔زرتاج گل نے لکھا کہ چند لمحوں کی خطا پر یوں ماتم کناں ہونے کے بجائے اپنی جماعتوں کے حشر نشر پر توجہ دیں تو شاید ان کے حق میں بہتر ہو۔ساتھ ہی انہوں نے لکھا کہ وہ تنقید سے نہیں گھبراتیں بلکہ اس سے اورمضبوط ہوتی ہیں۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ خریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close