بلاگپہلا صفحہسوشل میڈیافن اور فنکار

عرفان خان اپنے دور کا بہترین اداکار،کینسر جیسے موزی مرض سے زندگی کی بازی ہار گئے

مداح اور شوبز انڈسٹری سے تعلق رکھنے والی شخصیات کا اداکار کو خراج تحسین اور دکھ کا اظہار

ٹائر فروش جاگیر دار خان کا بیٹا عرفان خان امر ہوگیا

عرفان خان 1966ء میں راجستھان کے علاقہ جے پور میں مسلم خاندان میں پیدا ہوئے۔ان کا نام صاحبزادہ عرفان علی خان رکھا گیا، ان کے والد جاگیر دار خان ٹائر فروخت کرتے تھے۔انہوں نے  پسماندگان میں بیوہ ستاپا سکدر اور دوبیٹے بابل اور ایان چھوڑے ہیں۔

irfan Khan with Wife
irfan Khan with Wife

کرکٹ میں ناکام اداکاری میں کامیاب یہ ہے عرفان خان

کرکٹ میں ناکامی کے بعد 1984ء میں عرفان خان کو سکالر شپ پر ڈرامہ سکول دہلی میں داخلہ مل گیا، فلم انڈسٹری میں نام بنانے کیلئے انہوں نے کوششیں جاری رکھیں اور 1988ء میں انہیں سلام ممبئے میں چھوٹا سا کردار ملا۔

عرفان خان چھوٹے سیریلز میں معمولی کردار ملنے کی وجہ سے پریشان ہوگئے تھے ایک بار انہوں نے بے بسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ فلم انڈسڑی کی بڑی اسکرین پر نام کمانے آئے تھے لیکن ٹی وی کے چھوٹے کرداروں میں انہیں پھنسا دیا گیا ہے۔لیکن انہوں نے ہمت نہیں ہاری۔

عرفان خان نے برٹش امریکن سینما میں بھی جگہ بنائی، 8 آسکر ایوارڈ جیتنے والی فلم سلم ڈاگ ملینئر میں انکا پولیس آفیسر کا کردار  یاد گار بن گیا۔

ایک اور آسکر ایوارڈ جیتنے والی اینگ لی کی ہدایتکاری میں بننے والی فلم’ لائف آف پائی‘ میں بھی عرفان خان نے اداکاری کے جوہر دکھائے۔ 30 سالہ فلمی کیریئر میں عرفان خان نے بالی ووڈ کی متعدد فلموں میں کام کیا اور متعدد ایوارڈ ز اپنے نام کیے۔

ہالی وڈ اور بالی وڈ میں اپنی اداکاری کے جوہر دکھائے

سلم ڈاگ ملینیئر اور دی ایمزنگ سپائڈرمین جیسی ہالی وڈ فلموں اور بالی وڈ کی 100 سے زائد فلموں میں کام کرنے والے اداکار عرفان خان کی نیورونڈوکرائن ٹیومر جیسے مرض نے جان لےلی۔عرفان خان نے  پیکو، مقبول، حاصل اور پان سنگ تومر ہٹ ہوئیں۔ان کی ہالی وڈ فلموں میں لائف آف پائی، جراسک ورلڈ، سلم ڈاگ ملینیئر اور دی ایمزنگ سپائڈر مین شامل ہیں۔

زندگی میں اچانک کچھ ایسا ہو جاتا ہے جو آپ کو آگے لے کر جاتا ہے،عرفان خان

عرفان خان کو نیورو اینڈوکرائن کینسر کا 2018 میں معلوم ہوا تھا۔انھوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ  ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا تھا کہ

’’زندگی میں اچانک کچھ ایسا ہو جاتا ہے جو آپ کو آگے لے کر جاتا ہے۔ میری زندگی کے گذشتہ چند برس ایسے ہی رہے ہیں۔ مجھے نیورو اینڈوکرائن ٹیومر نامی مرض ہو گیا ہے لیکن میرے آس پاس موجود لوگوں کے پیار اور طاقت نے مجھ میں امید پیدا کی ہے‘‘54 سالہ عرفان خان نیورو اینڈوکرائن کینسر کا شکار تھے.

مرض کے بارے میں علم ہوتے ہی عرفان خان علاج کے لیے لندن چلے گئے تھے اور تقریباً ایک برس وہاں رہنے کے بعد مارچ 2019 میں انڈیا واپس آئے تھے۔انھیں منگل کو بڑی آنت کے انفیکشن کے باعث ممبئی کے کوکیلابین ہسپتال میں انتہائی نگہداشت کے یونٹ میں داخل کیا گیا تھا۔جہاں وہ جان کی بازی ہار گئے۔

باہمت اداکار نے لندن واپسی کے بعد بھی فلمی دنیا کا رخ کیا تھا

واپسی کے بعد عرفان خان نے دوبارہ کام بھی شروع کیا تھا اور چند ماہ قبل ان کی فلم ‘انگریزی میڈیم’ بھی ریلیز ہوئی ہے جو ان کی کامیاب فلم ’ہندی میڈیم‘ کا سیکوئل ہے۔انڈین میڈیا کے مطابق فلم کی شوٹنگ کے دوران بھی عرفان کی طبیعت اکثر بگڑ جاتی تھی۔کئی ایسے مواقع آئے کہ شوٹنگ روکنی پڑتی تھی اور جب عرفان خان بہتر محسوس کرتے تھے تب شاٹ لیا جاتا تھا۔یہاں سے انکا اپنے شعبہ سے محبت اور لگن کا اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔

‘مجھے یقین ہے کہ میں ہار چکا ہوں۔’ اداکار عرفان خان نے یہ دل کو چھو لینے والی بات اپنے  2018 کے ایک نوٹ میں کہی تھی جب وہ کینسر کی بیماری سے لڑ رہے تھے۔

انھوں نے اپنے ٹیوٹر اکاونٹ میں لکھا تھا کہ ‘بعض اوقات آپ جاگتے ہیں تو پتہ چلتا ہے کہ آپ کی دنیا تہ و بالا ہو چکی ہے۔ گذشتہ دو ہفتے میری زندگی کسی پراسرار کہانی کی طرح رہی۔ مجھے پتہ نہیں تھا کہ میں نادر کہانی کی تلاش میں نادر بیماری میں مبتلا ہو جاؤں گا۔انھوں نے کبھی ہار نہیں مانی ہے اور اپنی پسند کے لیے لڑتے رہے ہیں۔ انھوں نے کہا ان کے اہل خانہ اور دوست ان کے ساتھ ہیں۔

نیورو اینڈوکرائن کیا بیماری ہے

طبی ماہرین کے مطابق یہ بیماری انسانی جسم میں ان خلیوں کو متاثر کرتی ہے جو خون کے بہاؤ میں ہارمونز خارج کرتے ہیں۔نیورونڈوکرائن ٹیومر جسم کے کسی بھی حصے میں بن سکتا ہے اور یہ کینسر زدہ بھی ہوسکتا ہے اور کیسنر کے بغیر بھی۔بعض ٹیومر بڑے پیمانے پر ہارمونز کے خون کے بہاؤ میں اخراج کا باعث بنتے ہیں اور ان کی وجہ سے دل کا عارضہ ہو سکتا ہے اور خون کے دباؤ میں فرق پڑتا ہے۔ماہرین کے مطابق بعض نیورونڈوکرائن ٹیومرز کا علاج آپریشن یا کیموتھراپی سے ممکن ہے۔

عرفان خان کے بارے میں انکے ترجمان کی رائے

سنہ 2018 میں غیرمعمولی کینسر کی تشخیص ہونے کے بعد انھوں نے سامنے آنے والے چیلنجز کا ڈٹ کر مقابلہ کیا اور اپنی زندگی کو سنبھالے رکھا۔وہ ایک مضبوط ارادوں والے انسان تھے جنھوں نے آخر تک لڑائی لڑی۔ انھوں نے ہمیشہ اپنے قریب آنے والوں کی حوصلہ افزائی کی۔وہ اپنے کنبے کو جن سے وہ بہت پیار کرتے تھے چھوڑ کر جنت چلے گئے ہیں۔ انھیں اپنے اہل خانہ کا بہت پیار ملا۔ وہ اپنے پیچھے ایک وراثت چھوڑ گئے ہیں۔ ہم سب ان کی روح کو سکون ملنے کی دعا کرتے ہیں۔’

عرفان خان کی والدہ کا انتقال

گذشتہ دنوں ریاست راجستھان کے شہر جے پور میں عرفان خان کی والدہ سعیدہ بیگم بھی چل بسی تھیں۔بھارت میں لاک ڈاوٴن کے باعث وہ اپنی والدہ کی آخری رسومات میں شامل نہیں ہو سکے تھے۔ عرفان خان ویڈیو کال کے ذریعے والدہ کی آخری رسومات میں شریک ہوئے تھے۔

عرفان خان کی موت پر انکے ساتھی اداکاروں اور سیاست دانوں کا رد عمل

پاکستان اور انڈیا میں سوشل میڈیا صارفین نے انڈین اداکار عرفان خان کی موت پر دکھ اور صدمے کا اظہار کیا اور  ان کے نام کا ہیش ٹیک ٹوئٹر پر پہلے نمبر پررہا۔عرفان خان کی مقبولیت کا اندازہ اس بات پر لگایا جاسکتا ہے کہ کس طرح ان کی موت ٹیوٹر پر ٹاپ ٹرینڈ بن گئی۔

اداکار امیتابھ بچن نے ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہا کہ عرفان خان بےپناہ ٹیلنٹ کے حامل ایسے اداکار تھے جنھوں نے سنیما کو بہت کچھ دیا۔ وہ بہت جلدی چلے گئے اور اپنے پیچھے ایک بڑا خلا چھوڑ گئے ہیں۔

انڈیا کے وزیر اعظم نریندر مودی نے عرفان خان کی موت کو سینما اور تھیٹر کا نقصان قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ان کو اپنی ورسٹائل اداکاری کے لیے ہمیشہ یاد رکھا جائے گا۔

سیاسی رہنما راہول گاندھی نے اپنے پیغام میں کہا کہ عرفان خان ایک ورسٹائل اور ماہر فنکار تھے اور فلم اور ٹی وی کی دنیا میں انڈیا کے سفیر تھے۔

اکشے کمار نے کہا کہ  ہمارے زمانے کے بہترین اداکاروں میں سے ایک عرفان خان کے انتقال کا سن کر بے حد افسوس ہوا ہے، خدا اس مشکل گھڑی میں ان کے گھر والوں کو ہمت دے۔

اداکارہ پریانکا چوپڑا نے عرفان خان کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرنے کے ساتھ ساتھ لواحقین سے تعزیت کی۔

اجے دیوگن نے عرفان خان کے انتقال پر  افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی سنیما کے لیے ناقابل تلافی نقصان ہے۔انہوں  نے عرفان خان کی اہلیہ اور بچوں سے تعزیت بھی کی۔

اداکارہ سونم کپورنے عرفان خان کے انتقال پر افسوس اور اہلخانہ سے تعزیت کا اظہار کیا۔

بالی وڈ اداکارہ شبانہ اعظمی نے اداکار عرفان خان کے انتقال پر شدید رنج کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ عرفان خان کا انتقال نہ صرف ان کے گھر والوں کے لیے بلکہ پوری فلم انڈسٹری کے لیے بہت بڑا نقصان ہے۔

 عرفان خان کے انتقال پر پاکستانی شوبز اسٹارز بھی غمزدہ نظر آئے

بالی وڈ اداکار عرفان خان کے انتقال پر پاکستان شوبز انڈسٹری کی شخصیات کی جانب سے بھی افسوس کا اظہار کیا گیا۔

صبا قمر کا کہنا تھا کہ عرفان خان عظیم اداکار تھے جن سے بہت کچھ سیکھا، عرفان خان اور ان کے کام کی جتنی تعریف کی جائے کم ہے۔صبا قمر نے انسٹاگرام پر فلم ’ہندی میڈیم‘ کے سیٹ کی تصویر پوسٹ کرتے ہوئے لکھا کہ عرفان خان کے انتقال کی جب سے خبر سنی ہے، بہت افسردہ ہوں، ایسا لگتا ہے کہ کل ہی کی بات ہے کہ ’ہندی میڈیم‘ کے سیٹ سے واپس آئی ہوں۔

         اداکارہ سجل علی نے عرفان خان کے انتقال پر حیرانی اور افسوس کا اظہار کیا۔

اداکارہ ارمینا رانا خان نے کہا کہ آج میں بے حد افسردہ ہوں، میں عرفان خان کے کام کی مداح ہوں، خاص طور پر ان کی فلم ‘لائف آف پی’ کی۔اداکارہ نے مزید کہا کہ عرفان خان کا انتقال فلم انڈسٹری کے لیے بہت بڑا نقصان ہے

اداکارہ اشنہ شاہ نے عرفان خان کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ نقصان اداکاری کے میدان میں ایک خلا چھوڑ گیا ہے جسے پورا کرنا مشکل ہے۔

لالی وڈ اداکار شان شاہد نے عرفان خان کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ان کے لواحقین کے لیے صبر کی دعا بھی کی۔

 پاکستانی نیوز چینلز نے عرفان خان کی موت خبر بریکنگ کے طور پر چلائی

عرفان خان کو اداکاری کے شعبے میں ان کی خدمات پر دئے گئے اعزازات

 2011 میں پدم شری سے نوازا گیا تھا،2013 میں انھیں پان سنگھ تومر میں بہترین اداکاری پر نیشنل فلم ایوارڈ بھی ملا تھا اور اسی سال فرانس میں کانز فلمی میلے کے دوران ان کی فلم ’لنچ باکس‘ نے عوامی پسندیدگی کا ایوارڈ بھی جیتا تھا۔یہ وہ واحد انڈین فلم تھی جسے اُس برس لندن فلم فیسٹیول کے مقابلے کے لیے بھی چنا گیا تھا۔

عرفان خان کو سیکس کے بدلے کام کی پیشکش بھی ہوئی تھی

ہالی ووڈ کی بااثر شخصیت ہاروی وائنسٹین کا سیکس سکینڈل سامنے آنے کے معاملے پر عرفان خان کا کہنا تھا کہ انہیں بھی کئی مرتبہ جنسی تعلقات کے بدلے میں کام کی آفر ملی تھی۔انہوں نے بتایا تھا کہ انہیں کئی مرتبہ ایسی پیشکش یا اشارے دیے گئے کہ اگر میں ان کے ساتھ سوتا ہوں تو مجھے کام مل جائے گا۔ اور یہ آفرمجھے مردوں اور عورتوں دونوں کی جانب سے ملتی تھی،لیکن اب میرے ساتھ ایسا نہیں ہوتا۔

عرفان خان نے اپنے دور میں 80 کے قریب فلموں میں کام کیا

پان سنگھ تومر فلم 2012 میں سامنے آئی اس فلم میں عرفان خان نے کھلاڑی پان سنگھ تومر کی سوانح حیات میں کام کرکے سب کو اپنی بہترین اداکاری سے حیران کردیا تھا۔

2013 کی فلم لنچ باکس میں عرفان خان نے نمرت کور اور نواز الدین صدیقی کے ساتھ کام کیا۔اس فلم کی کہانی دو ایسے افراد پر مبنی تھی جو لنچ باکس میں ایک دوسرے کو نوٹس لکھ کر بھیجا کرتے جس سے ان کے درمیان رومانوی تعلق کا آغاز ہوجاتا۔اس فلم میں بھی عرفان خان کی اداکاری کو خوب پسند کیا گیا تھا۔ 

فلم تلوار 2015 میں ریلیز ہوئی تھی جس کی ہدایات میگھنا گلزار نے دی تھی۔اس فلم کی کہانی ایک لڑکی کے قتل کے گرد گھومتی ہے، جس کے کیس کی تفتیش عرفان خان کرتے ہیں۔یہ فلم بین الاقوامی سطح پر ’گلٹی‘ کے نام سے بھی ریلیز کی گئی۔ویشال بھردواج نے اس فلم کی کہانی تحریر کی تھی۔

2017 کی فلم ’ہندی میڈیم‘ میں عرفان خان نے ایک ایسے والد کا کردار نبھایا تھا جو اپنی بیٹی کو ایک اچھے اسکول میں داخلہ دلانے کی جدوجہد میں مصروف رہتے ہیں۔اس فلم میں عرفان خان کے ساتھ پاکستان کی کامیاب اداکارہ صبا قمر نے مرکزی کردار نبھایا۔عرفان خان اور صبا قمر کے کام کو خوب سراہا جبکہ ان کی جوڑی بھی بےحد پسند کی گئی۔

فلم مقبول 2003 میں ریلیز ہوئی، جس کی کہانی شیکس پیئر کے ناول ’میچبیتھ‘ پر مبنی تھی۔اس فلم میں عرفان خان نے انڈر ورلڈ ڈان کے خاص آدمی کا کردار نبھایا جو بعدازاں صرف ایک عورت کی محبت کی خاطر اس ڈان کو مار کر خود ٹیم کا سربراہ بن جاتا ہے۔ اس میں عرفان خان کے ہمراہ تبو اہم کردار نبھاتی نظر آئیں۔

2012 میں سامنے آئی ہولی وڈ فلم ’دی لائف آف پائے‘ میں عرفان خان نے اہم کردار نبھایا۔اس فلم کی کہانی ایک نوجوان کی حیرت انگیز زندگی پر مبنی ہے، جس کا کردار عرفان خان نے نبھایا۔ہولی وڈ کی اس فلم میں عرفان خان کے کام کو بےحد نوٹس کیا گیا جبکہ فلم کی سینمیٹوگرافی کو بےحد سراہا گیا

فلم پیکو 2015 میں ریلیز ہوئی تھی، جس میں عرفان خان کے ساتھ دپیکا پڈوکون اور امیتابھ بچن نے مرکزی کردار ادا کیے۔اس فلم میں عرفان خان نے ایک ٹیکسی سروس کے مالک کا کردار نبھایا، جو دپیکا اور امیتابھ کے کردار کو کولکتہ لے کر جاتا ہے۔اس کامیڈی فلم کو مداحوں نے بےحد پسند کیا جبکہ عرفان خان اور دپیکا کی جوڑی کو بھی سراہا گیا تھا۔

2018 میں ریلیز ہوئی فلم ’بلیک میل‘ میں عرفان خان نے ایک ایسے شوہر کا کردار نبھایا جو اپنی اہلیہ کو کسی اور کے ساتھ تعلقات رکھتے ہوئے پکڑ لیتا ہے۔بعدازاں یہ بلیک میلر بن کر اپنی اہلیہ اور اس کے ساتھی کو ڈراتا اور پیسے وصول کرتا ہے۔فلم کو ویسے تو تجزیہ کاروں کا ملا جلا ردعمل موصول ہوا البتہ عرفان خان کی اداکاری کو بے حد سراہا گیا تھا۔عرفان خان کے ہمراہ اداکارہ کریتی کلہاڑی نے اس فلم میں اہم کردار نبھایا۔

ٹیگز
Show More

متعلقہ خریں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close