بلوچستانپاکستان

سیاسی ماحول گرم،مینگل کی فصل الرحمان اور صادق سنجرانی سے ملاقاتیں

حکومت کےلئے خطرے کی گھنٹی بج گئی،ملک میں گرمی کے ساتھ سیاسی پارہ بھی بڑھنے لگا

اسلام آباد(سہب حال) ملک میں گرمی کی شدت کے ساتھ سیاسی پارہ بھی بڑھنے لگا ہے۔وفاق میں پاکستان تحریک انصاف حکومت کی اتحادی جماعت بلوچستان نیشنل پارٹی کی علیحدگی کے بعد   سیاسی ماحول میں گرما گرمی دیکھی جارہی ہے۔

سردار اختر جان مینگل جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی رہائش گاہ پہنچے اور ان سے تفصیلی ملاقات کی ہے۔ سردار اخترمینگل کی مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کے بعد  حکومتی حلقوں میں تشویش پائی جاتی ہے۔

جیو نیوز کے مطابق حکومتی ذرائع نے انہیں بتایا ہے کہ اتحادیوں میں غلط فہمیاں سیاست کاحصہ ہیں، اختر مینگل سے آئندہ ایک دو روز میں رابطہ کرکےان کے تحفظات دور کر کے معاملات حل کر لیے جائیں گے۔

ذرائع کے کے مطابق سردار اختر مینگل کی مولانا فضل الرحمان سے ملاقات کے موقع پر بی این پی کی طرف سے سینیٹر جہانزیب جمالدینی اور جے یو آئی کی طرف سے مولانا عبدالغفور حیدری،مولانا اسعد محمود اور دیگر بھی شریک ہوئے،ذرائع نے دعوی کیا ہے کہ ملاقات میں حکومتی بجٹ اور تحریک انصاف حکومت کو ٹف ٹائم دینے پر غور کیا گیا۔سردار اختر مینگل نے اپنے 6 نکاتی ایجنڈے پر بھی مولانا فضل الرحمن سے تبادلہ خیال کیا۔

یہ بھی پڑھیئے

 دوسری جانب چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے بھی بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل کے سربراہ سردار اختر مینگل سے پارلیمنٹ لاجز میں ملاقات کی ہے اور انہیں حکومت سے اختلافات دور کرنے کیلئے کردار ادا کرنے کی پیشکش بھی کر دی۔
ذرائع کے مطابق ملاقات کے دوران بی این پی مینگل کے سربراہ نے چیئرمین سینیٹ کو اپنے تحفظات سے  آگاہ کیا۔ذرائع کے مطابق سردار اختر مینگل نے چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کو حکومت کی دوبارہ حمایت کرنے کے لیے فوری یقین دہانی سے معذرت کرلی۔
چیئرمین سینیٹ اب وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کرکے انہیں سردار اختر مینگل کے تحفظات سے آگاہ کریں گے۔ذرائع کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی قیادت میں حکومتی وفد بھی آج سردار اختر مینگل سے ملاقات کرے گا۔
خیال رہے کہ گزشتہ روز قومی اسمبلی میں تقریر کرتے ہوئے اختر مینگل نے تحریک انصاف اتحاد سے علیحدگی کا اعلان کیا تھا۔قومی اسمبلی اجلاس کے دوران خطاب کرتے ہوئے بی این پی مینگل کے سربراہ اختر مینگل نے کہا تھا کہ میں آج ایوان میں پی ٹی آئی حکومت سے علیحدگی کا اعلان کرتا ہوں انہوں نے کہا تھا کہ ہم ایوان میں موجود رہیں گے اور اپنی بات کرتے رہیں گے۔واضح رہے کہ اس سے پہلے گزشتہ روز بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ سردار اختر مینگل اور سابق صدر آصف علی زرداری کے درمیان بھی ٹیلی فونک رابطہ ہوا ہے جس میں حکومت کارکردگی پر سخت تنقید کی گئی تھی

یہ بھی پڑھیئے

ٹیگز
Show More

متعلقہ خریں

333 Comments

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close