بلوچی حال

لکھو بلوچی،پڑھو بلوچی،بولو بلوچی،سہب حال میں ’’بلوچی حال‘‘ کا آغاز

تحریریں،تجزیے،شاعری،کہانیاں،افسانے،ناول،آڈیو ویڈیو سب بلوچی زبان میں ہونگے

’’ لکھو بلوچی،پڑھو بلوچی،بولو بلوچی’’ کےتحت’’ سہب حال ‘‘ میں   ’’بلوچی حال‘‘ کا آغاز

زبان و ادب (زبان و لبزانک ) کسی بھی قوم کے لیے اتنی ہی اہمیت رکھتے ہیں جتنی انسانی زندگی کی بقا کے لیے پانی ضروری ہے۔

مگر گزرے برسوں میں بلوچی زبان ڈیرہ غازی خان اور راجن پور میں سمٹ کر کوہ سلیمان کے تنگ و تاریک پہاڑیوں میں مدفن ہونے جارہی تھی جو اس سے بیشترمیدانی علاقے میں اپنی حیثیت کھو چکی ہے بہت سے قبائل کی قومی زبان بلوچی سے دوسری زبانوں میں منتقل ہوچکی ہے۔زبان کوئی بھی ہو قابل احترام ہے جس کے بولنے لکھنے اور پڑھنے میں کوئی قباحت نہیں لیکن اہم نقطہ اپنی مادری زبان کو بھول کر دوسری زبانوں کو اپنے مادری زبان قرار دینا قابل افسوس عمل ہے۔ہم سمجھتے ہیں کہ پاکستان سمیت دنیا میں جہاں بھی بلوچ موجود ہیں کی تاریخی وتہذیبی زبان بلوچی تھی کیونکہ سب کے آباؤ اجداد بلوچ تھے یہ الگ بات ہے کہ بہت سے لوگ اس زبان سے بےنیاز ہوگئے جس کی وجہ سے وہ اپنی تہذیبی خدوخال سے دور ہورہے ہیں اورخدشہ ہے کہیں نئی نسل اس سے عملاً دستبردار نہ ہو ۔۔
اس لیے     !!!

ان حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے سہب حال میں’’بلوچی حال‘‘ پیج کا اضافہ کیا گیا ہے جس میں ایسا مواد شامل کیا جائے گا جو خالصتاً بلوچی زبان و ادب پر مبنی ہوگا تاکہ نئی نسل جلال خان اور مرید و ہانی کو بلوچی زبان کی بنیادپرپڑھ اور سمجھ سکیں۔چاکرکے قصے ،گوہرام کی ریت ،بیورگ کی دانائی ،شہ کٹی کے قول،بالاچ کی چالاکیاں،باہر کا وعظ ،جاڑو کی بہادری ،ابوبکرکی شاعری ،ریحان کی موت ،بابا کے فیصلے،بالاچ گورگیج کےافسانے ،مست و سمو کا عشق،رحملی کابیان آزادی،جمالہان کا عشق حسن،جام درک کا کلام ندرت ،چگھا کابیان حق،جوانسال کا صوفیانہ کلام ،حضوربخش جتوئی کا ترجمہ کلام پاک ،پلیہ کھوسہ کا بے بدل شاعری ،مریدبلیدی کی آوازوسوز ،غفورلغاری کے دستانے اور میرگل خاں کے انقلابی شاعری کوبلوچی میں پڑھ سکیں اوراگلی نسل تک اس ورثے کومنتقل کرنے کے لیے ایسے پروگراموں کے انعقاد کے ساتھ ساتھ ٹھوس اورمثبت علمی و سائنسی بنیادوں پر مسلسل جدوجہد بھی لازم ہے۔

ماہرِین لسانیات کہتے ہیں کہ کسی بھی معاشرے کی ترقی میں مادری زبان اہم کردار ادا  کر سکتی ہے اور مادری زبان کے استعمال سے شرح خواندگی میں آسانی سے اضافہ کیا جا سکتا ہے

مادری زبان کی اسی اہمیت کو جانتے ہوئے معاشرتی سطح پر بیداری اور لوگوں کومعلومات تک رسائی دینے کےلیے ’’ سہب حال ‘‘ بہت جلد ایک نیا سلسلہ شروع کردیا ہے ۔اس کے لیے ویب سائٹ ’’ سہب حال ‘‘ میں ایک نیا پیج   ’’بلوچی حال‘‘ کے نام سے بنایا گیا ہے جس میں تحریریں، تجزیے، شاعری، کہانیاں،افسانے،ناول،آڈیو ویڈیو تمام مواد بلوچی زبان میں ہونگے۔

’’بلوچی حال‘‘  کے انچارج عبدالقیوم بلوچ ہونگے

 

آپکی قیمتی رائے کا متمنی    ’’عبدالقیوم بلوچ‘‘

ٹیگز
Show More

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close
Close